Home / News / عبوری ضمانت پر آزاد ملزمان نے9 افراد قتل کردئیے

عبوری ضمانت پر آزاد ملزمان نے9 افراد قتل کردئیے

راولپنڈی: عدالت سے عبوری ضمانت پر آزاد ملزمان نے نو افراد کی زندگیوں کے چراغ گل کر دیے، صدیق جان نے کیس سے متعلق تلخ حقائق بیان کر دیے

راولپنڈی کے علاقے میں ایک افسوسناک اور دل دہلا دینے والا واقعہ پیش آیا جس میں سفاک ملزمان کی جانب سے سفاکی کے ساتھ پانچ خواتین سمیت چار کمسن بچوں کا قتل کر دیا گیا، قتل کرنے والے ملزمان پہلے ہی عدالت سے عبوری ضمانت پر تھے۔

انہوں نے کہا کہ اسطرح کے کیسز میں تو پہلے پولیس کی جانب سے کوئی تسلی بخش یہ انویسٹیگیشن نہیں کی جاتی اور نہ ہی ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جاتی ہے لہذا اگر پولیس سفاک ملزمان کی گرفتاری میں کامیاب ہو بھی جائے تو وہ عدالت سے عبوری ضمانت حاصل کر لیتے ہیں، جو کہ ہمارے لیے بہت بڑا المیہ ہے۔

صدیق جان نے کہا کہ سفاک ملزمان نے 5 خواتین سمیت چار بچوں کو صرف اس لیے قتل کر دیا گیا کہ چند ہفتے قبل قتل ہونے والے خاندان کے افراد نے مخالف خاندان کی عورت کو قتل کیا تھا، جس کا بدلہ لینے کے لئے سفاک ملزمان نے گھر میں گھس کر خواتین اور بچوں کو ڈھونڈ ڈھونڈ کر گولیاں ماریں۔

انہوں نے کہا کہ جس بے دردی کے ساتھ خواتین اور کم سن بچوں کو فائرنگ کر کے قتل کیا گیا اگر ان کی تصاویر دیکھ لی جائیں تو دل خون کے آنسو روتا ہے، انہوں نے اپنے تجزیے میں لوگوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اس معاملے کو زیادہ سے زیادہ اجاگر کرنے کے لئے اور متاثرہ خاندانوں کو انصاف دلوانے کے لیے سوشل میڈیا پر آواز بلند کرنا ہوگی۔

صدیق جان نے بتایا کہ جس وقت ملزمان نے گھر میں گھس کر فائرنگ کی اس وقت اس خاندان کے مرد حضرات عدالت میں دوسرے قتل کیس میں عبوری ضمانت کے حصول کے لیے گئے ہوئے تھے اور ان کی غیر موجودگی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے پانچ خواتین جن میں سے دو حاملہ بھی تھیں کو قتل کر دیا۔

انہوں نے کہا کے اس افسوس ناک واقعے کو ہوئے تقریبا بارہ گھنٹے گزر چکے ہیں لیکن ابھی تک ٹویٹر پر کوی ٹرینڈ نہیں بنایا کیوں کے ان کی کوئی بچی ٹک ٹاک سٹار نہیں تھی اور نہ ہی اس کا کوئی انسٹاگرام پر اکاؤنٹ تھا، جس کی وجہ سے متاثرہ خاندان سے اظہار افسوس کرنے کے لیے ٹوئٹر پر کوئی ٹرینڈ نہیں بنا۔

جب تک اس طرح کی سفاک ملزمان کو عدالت کی جانب سے ڈھیل ملتی رہے گی تب تک اس طرح کے واقعات میں کمی نہیں آئے گی، اپنے پیغام کے آخر میں صدیق جان نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ میں چاہتا ہوں کے آپ لوگ راولپنڈی میں پیش آنے والے دل دہلادینے والے واقع میں ملزمان کو سزا دلوانے کے لیے سوشل میڈیا کے ذریعے زیادہ سے زیادہ اجاگر کیا جائے تاکہ اس طرح سے واقعات کی بیخ کنی کی جا سکے۔

Share
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Check Also

زمین پر قبضے کے خلاف سمون برادری کا عمر کوٹ پریس کلب کے سامنے احتجاج

ضلع سانگھڑکے علاقے اچھڑوتھرکے رہائشی محمد رمضان سموں، لکمیر سمون وغیرہ نے گاؤں کے معزز …