Home / News / جنرل ہسپتال کا ایڈیشنل ایم ایس ”منابھائی ایم بی بی ایس“ نکلا

جنرل ہسپتال کا ایڈیشنل ایم ایس ”منابھائی ایم بی بی ایس“ نکلا

ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کےسابق صدر اور جنرل ہسپتال کے موجودہ ایڈیشنل ایم ایس ڈاکٹر اجمل بھی منابھائی ایم بی بی ایس نکلے۔۔ جعلی ڈگری پر انہیں گرفتار کرلیا گیا۔ماسٹر منظور عرف سرکٹ نے “منابھائی” کی جعلی ڈگری بنادی۔

ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کا کہنا ہے کہ ہائی کورٹ سے ضمانت منسوخی کے بعد اینٹی کرپشن بہاولپور نے ملزم کو گرفتار کرکے پرچہ درج کرلیا ہے۔ ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کے مطابق ملزم نے 97-1996 میں ایف ایس سی کی جعلی ڈگری بنوا کر قائداعظم میڈیکل کالج بہاولپور میں داخلہ لیا جبکہ جعلی ڈگری بنانے پر ماسٹر منظور کے گرد بھی گھیر تنگ کردیا گیا۔

ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب گوہر نفیس نے بتایا کہ ماسٹر منظور احمد نامی شخص نے ملزم کو حیدرآباد بورڈ سندھ سے ایف ایس سی کی جعلی ڈگری بنوا کر دی جب کہ ایم بی بی ایس کے تیسرے سال قائداعظم میڈیکل کالج بہاولپور سے تگڑی سفارش کرا کے پنجاب میڈیکل کالج مائیگریشن کروالی۔

پی ایم سی (PMC) نے جب حیدرآباد بورڈ سے ایف ایس سی کی ڈگری کی تصدیق کرائی تو ڈگری جعلی نکلی جب کہ پنجاب میڈیکل کالج نے ملزم کو ایم بی بی ایس کے تیسرے سال ایکسپیل کر دیا تھا، اس کے بعد بھی ملزم نے جعلسازی نہ چھوڑی اور جعلی مائیگریشن لیٹر بنوا کر بقائی یونیورسٹی حیدر آباد کے میڈیکل کالج کے فائنل ائیر میں داخلہ لے لیا اور ایک سال بعد ایف ایس سی کی جعلی ڈگری پر داخلہ لینے والا ایم بی بی ایس ڈاکٹر بن گیا۔

اینٹی کرپشن کے مطابق ملزم ڈاکٹر اجمل نے ڈاکٹری کی ساری تعلیم اور بعد میں ساری نوکری ایف ایس ای کی جعلی ڈگری پر کی، ایف ایس ای میں ملزم کے اصل نمبر 630 ہیں جوکہ میڈیکل میں داخلہ کے لئے ناکافی تھے جب کہ میرٹ لسٹ میں داخلے کے لئے جو ڈگری دکھائی اس پہ ملزم کے نمبر 855 تھے۔

Share
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Check Also

زمین پر قبضے کے خلاف سمون برادری کا عمر کوٹ پریس کلب کے سامنے احتجاج

ضلع سانگھڑکے علاقے اچھڑوتھرکے رہائشی محمد رمضان سموں، لکمیر سمون وغیرہ نے گاؤں کے معزز …