Home / News / موٹروے زیادتی کیس کا تیسرا ملزم بھی گرفتار

موٹروے زیادتی کیس کا تیسرا ملزم بھی گرفتار

لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر خاتون سے زیادتی میں ملوث دو ملزمان کے بعد اب تیسرے ملزم کا نام بھی سامنے آگیا ہے، گینگ ریپ کیس میں تیسرا ملزم بالا مستری ڈکیتی کی پوری منصوبہ بندی میں شامل رہا۔

زیادتی اور ڈکیتی کے کیس میں گرفتار ملزم شفقت علی نے اعتراف جرم کرتے ہوئے حیران کن انکشافات کیے ہیں، ملزم شفقت علی کا دوران تفتیش بتانا تھا کہ ملزم عابد علی نے مجھے اور بالا مستری کو واردات کے لیے لاہور بلایا تھا۔

ملزم شفقت علی کا اپنے بیان میں کہنا تھا کہ ہم تینوں نے اکٹھےہو کر شاہدرہ میں پہلے دہی بڑے کھائے اور وہاں سے ہم واردات کے لیے روانہ ہوگئے لیکن نامعلوم وجوہات کی بنا پر بالا مستری راستے میں سے ہی واپس چلا گیا۔

موٹروے کیس میں عابد اور شفقت کا راستے سے واپس جانیوالا ساتھی بھی گرفتار

موٹروے کیس میں عابد اور شفقت کا راستے سے واپس جانیوالا ساتھی بھی گرفتار

Posted by GNN on Monday, September 14, 2020

شفقت علی کا اپنے بیان میں انکشاف کرتے ہوئے یہ بھی کہنا تھا کہ موٹروے پر خاتون کے ساتھ ڈکیتی کی واردات کے دوران پولیس کے موقع پر پہنچ جانے کی وجہ سے ہم دونوں زیادتی کیے بغیر ہی وہاں سے فرار ہو گئے۔

ملزم شفقت علی کا کہنا تھا کہ خاتون کے ساتھ موٹروے پر ڈکیتی کی واردات کے بعد میں نے اور عابد نے قلعہ ستارشاہ میں ایک دن قیام کیا اس کے بعد میں واپس دیپالپور اور عابد مانگا منڈی اپنے باپ کے پاس چلا گیا، میرا عابد کے ساتھ تین دن پہلے رابطہ ہوا تھا اس کے بعد سے ہمارا کوئی رابطہ نہیں ہوا۔

پولیس نے عابد اور شفقت کے تیسرے ساتھی اقبال مستری کو چیچہ وطنی سے گرفتار کر لیا۔

ملزم شفقت علی نے تفتیش کے دوران پولیس کو بیان دیتے ہوئے یہ بھی کہا کہ گذشتہ ایک ماہ پہلے اس نے اور عابد علی نے شیخو پورہ میں بھی ایک خاتون کے ساتھ ڈکیتی کے دوران زیادتی کرنے کی کوشش کی تھی۔

Share
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Check Also

زمین پر قبضے کے خلاف سمون برادری کا عمر کوٹ پریس کلب کے سامنے احتجاج

ضلع سانگھڑکے علاقے اچھڑوتھرکے رہائشی محمد رمضان سموں، لکمیر سمون وغیرہ نے گاؤں کے معزز …